محبت، انتظار اور سرخ گلاب

میں صرف محبت کر رہا ہوں، صرف محبت

Shehryar Khawar

33fc3b2ef4a48f5311be5b43b0e06db2

میں محبت کے لئے قربانی نہیں دے رہا ڈاکٹر صاحب.’ ثاقب اپنی جگہ سے اٹھ کر کھڑے ہوتے ہوئے میری طرف دیکھ کر کہا، ‘میں صرف محبت کر رہا ہوں، صرف محبت. قربانی انا کے پجاری دیا کرتے ہیں، محبت کرنے والے نہیں. اور انتظار تو خدا صرف خشقسمتوں کو نصیب کرتا ہے.’ ثاقب نے نم آنکھوں مگر ایک نرم سی مسکراہٹ کے ساتھ کہا اور برآمدے کی سیڑھیاں اتر کر بارش بھری رات میں جذب ہوگیا

میں نے اس بے لوث محبت کرنے والے کو جاتا دیکھا، جس کی زندگی شروع ہونے سے پہلے ہی ختم ہو چکی تھی،جو خوشیوں کے حصول سے پہلے ہی لٹ چکا تھا.مگر پھر بھی اس کا حوصلہ بلند تھا اور امید زندہ تھی. شاید محبت یہ ہی ہوتی ہے. مایوسی کی اندھیری رات میں دور جلتے دیے کا کام دیتی ہے. دیہ جلتا رہے تو محبت کرنے والے سفر کرتے رہتے ہیں. دیے…

View original post 6,549 more words

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s