نتھیا گلی کا دانتے اور نیو یارک کی نتاشہ

Shehryar Khawar

governors-lodge-at-nathiagali-khyber-pakhtunkhwa-pakistan

نتاشہ نیویارک یونیورسٹی میں فلسفہ پڑھاتی تھی اورگرمیوں کی چھٹیاں گزارنے پاکستان آی ہوئی تھی. ماں باپ تو کب کے انتقال کر چکے تھے. بس خونی رشتوں کے نام پر ایک خالہ تھی جوراولپنڈی میں رہتی تھی. خالہ بھی شعبہ تعلیم سے وابستہ تھی. اولاد تھی نہیں بس کالج کی بچیوں کو اپنا سمجھ کر پڑھاتی تھی. میاں سرکاری ہسپتال میں امراض قلب کے شعبے کے انچارج تھے. پاکستان کے چوٹی کے ماہرین میں شمار ہوتا تھا اور خوب پریکٹس چلتی تھی. کھاتے پیتے لوگ تھے لیکن دولت جمع کرنے سے زیادہ غریبوں کی خدمت پر زیادہ یقین رکھتے تھے. نتاشہ کو ہمیشہ ان دونوں سے ملنے سے ایک عجیب سی خوشی ملتی تھی 

وہ تقریباً اٹھتیس کی ہو چلی تھی مگر شادی ابھی تک نا ہوئی تھی. یہ بات ہرگز نہیں تھی کے شکل و صورت میں کوئی کمی تھی. اونچا لمبا قد، گورا مائل گندمی رنگ، لمبے سیاہی…

View original post 7,285 more words

Advertisements

One thought on “نتھیا گلی کا دانتے اور نیو یارک کی نتاشہ

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s